اسرائیل کے وظیفوں پر پلنے والے بڈھے بڈھے جرنیلو! ہمیں سیاست نہ سکھاؤ اپنی حدود میں رہو،مولانا فضل الرحمٰن کی پاک فوج کے خلاف ہرزہ سرائی

مولانا فضل الرحمٰن ہیں کہ میں نہ مانوں کی رٹ لگائے ہوئے ہیں۔پی ٹی آئی کی حکومت جس دن وجود میں آئی تھی انہوں نے اسی دن حکومت اور اسٹیبلشمنٹ کے خلاف علم بغاوت بلند کر دیا تھا۔مولانا نے تو پہلے دن سبھی اپوزیشن پارٹیوں کو متحد ہو کر الیکشن ماننے سے انکار کا مشورہ دیا تھا مگر باقی جماعتوں نے استعفا دینے اور حکومت کے خلاف محاذ کھڑا کرنے سے انکار کر دیا تھا تاہم جب ہر طرف سے مولانا کو رسوائی کا سامنا کرنا پڑا تو انہوں نے تن تنہا میدان میں اترنے کافیصلہ کر لیا۔ مولانا فصل الرحمٰن نے ملک گیر احتجاجی جلسے کیے اور بالآخر پی ٹی آئی کے نقشِ قدم پر چلتے ہوئے اسلام آباد میں دھرنا دینے اور لاک ڈاؤن کرنے کا عندیہ دے دیا۔ گزشتہ دو ماہ سے اسلام آباد لاک ڈاؤن کی تاریخیں بدلی جا رہی ہیں۔ مولانا فضل الرحمٰن نے اسلام آباد دھرنے کے لیے دیگر سیاسی جماعتوں کو شامل ہونے کا بھی کہا تھا مگر دیگر جماعتیں ابھی گومگو کا شکار ہیں۔تاہم مولانا صاحب اپنے فیصلے پر ڈٹے ہوئے ہیں۔گزشتہ دنوں ایک جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمٰن نے پاک فوج کے سابق جرنیلوں کے خلاف بھی ہرزہ سرائی کی انہوں نے اپنے خطاب میں ریٹائرڈ جرنیلوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ”بڈھے بڈھے جرنیلو میڈیا میں آ کر ہمیں سیاست نا سکھاؤ،یہ آپ کا کام نہیں ہے، آپ کا کام یہ بتانا ہے کہ کشمیر کو کیسے آزاد کرانا ہے،جہاد کیسے کرنا ہےیا پھر یہ بتاؤ کہ بنگال کیسے الگ کرنا ہے اور ہتھیار کس طرح پھینکنے ہیں۔سیاست کرنا آپ کا کام نہیں لہٰذا سیاست کے میدان سے دور رہیں اور اپنی حدود میں رہو،آپ کون ہوتے ہو مجھے سیاست سکھانے والے۔آپ اسرائیل کے وظیفوں پر پلنااور اس کی ترجمانی کرنا چھوڑ دو۔“مولانا فضل الرحمٰن کی اس تقریر کے بعد سوشل میڈیا پر انہیں خاصی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔دیکھنا یہ ہے کہ کیا مولانا فضل الرحمٰن اسلام آبادمیں دھرنا دینے میں کامیاب ہو پاتے ہیں یا پھر حکومت کی مذاکرات کی کوششیں رنگ لاتی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں