ایسے لوگ جو کونسلر بھی نہیں بن سکتے عمران خان نے انہیں بھی وزیر بنا دیا ہے۔۔۔‘‘ تحریک انصاف میں کس چیز کا فقدان ہے؟ شیخ رشید وزیر اعظم کے خلاف پھٹ پڑے

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) کابینہ میں ایسے لوگ موجود ہیں جو کونسلر بھی نہیں بن سکتے، لیکن عمران خان نے انہیں وزیر بنا رکھا ہے، وزیر ریلوے کہتے ہیں کہ تحریک انصاف میں قیادت کا بحران ہے، عمران خان کے علاوہ حکمراں جماعت میں کوئی دوسرا رہنما لیڈر بننے کے قابل نہیں ہے۔
تفصیلات کے مطابق عوامی مسلم لیگ کے سربراہ اور وفاقی وزیر برائے ریلوے شیخ رشید احمد نے تحریک انصاف کے اندرونی معاملات اور وفاقی کابینہ پر تنقید کی ہے۔وزیر ریلوے شیخ رشید کہتے ہیں کہ تحریک انصاف میں قیادت کا بحران ہے، عمران خان کے علاوہ حکمراں جماعت میں کوئی دوسرا رہنما لیڈر بننے کے قابل نہیں ہے۔ کابینہ میں ایسے لوگ موجود ہیں جو کونسلر بھی نہیں بن سکتے، لیکن عمران خان نے انہیں وزیر بنا رکھا ہے۔شیخ رشید کا مزید کہنا ہے کہ عید کے بعد وفاقی کابینہ میں ردوبدل کا ٹریلر چلے گا اور 3 وزراء تبدیل ہوں گے۔لاہور میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے ریلوے شیخ رشید نے عید کے دن سفر کرنے والوں کے لیے آدھے ٹکٹ کا اعلان کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ مجھے سندھ حکومت بلا وجہ نشانہ بنا رہی ہے۔ سندھحکومت 207 بلین کا وعدہ کریں میں کے سی آر سنبھال لوں گا، سندھ حکومت سے درخواست ہے کے سی آر کو سیاست میں نہ ڈالیں۔ ڈی ریلمنٹ کے واقعات پر ان کا کہنا تھا کہ ایک واقعے سے متعلق رپورٹ آگئی ہے۔30 مئی تک سامنے لائیں گے۔ ہم نے 20 لوکو موٹو کو نوٹس دیا 30 مئی تک معیار کے مطابق کریں۔ کمپنی نے لوکو موٹو ٹھیک نہیں کیے تو زر ضمانت 10 فیصد کیش کروالیں گے۔ شیخ رشید نے کہا کہ 8 ہزار نوکریاں اور ہمارے پاس 12 لاکھ درخواستیں آئی ہیں۔ کوئی ایک نوکری بھی بغیر میرٹ کے نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن چاہتی ہے نیب میں ان کے خلاف کوئی ریفرنس نہ آئے، آڈیو ویڈیو کو چھوڑیں ان کرپٹ عناصر کی چیزیں دیکھیں۔ان کا ماضی دیکھ لیں جب بھی پھنستے ہیں اداروں کو ٹارگٹ کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کو خود این آر او کے لیے بھیک مانگتے دیکھا ہے۔ مہنگائی کے سب سے بڑے ذمہ دار ن لیگ اور پیپلز پارٹی ہے۔ آصف زرداری اور شہباز شریف یہ سب ایک ہیں۔زرداری چاہتے ہیں شہباز شریف کی طرح وہ بھی ملک سے بھاگ جائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی میں اچھے لوگ بھی ہیں لیکن جرأت نہیں الگ پارٹی بنالیں۔قمر الزماں کائرہ، لطیف کھوسہ اور کئی اچھے لوگ بھی ان لوگوں کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارتی الیکش کے بارے میں انہوں نے کہا کہ مودی نے بہت پہلے کہا تھا سیکولر ازم کا دور گیا اب پرو ہندو بھارت بنے گا، 2020ء دنیا میں مشکلات کا سال ہے، بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے مسلمانوں کو سیٹ دی نہ ہی ووٹ مانگے۔ عالمی سطح پر بہت تبدیلیاں ہونے جا رہی ہیں۔ الیکشن الیکشن کہنا آسان ہے، الیکشن میں ملک کی بنیادیں ہل جاتی ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں