خواتین ناک کیوں چھدواتی ہیں؟ جانیئے ایسی وجہ جو آپ کو بھی معلوم نہیں ہوگی

خواتین ناک کیوں چھدواتی ہیں؟ جانیئے ایسی وجہ جو آپ کو بھی معلوم نہیں ہوگی

پاکستان اور بھارت میں یہ روایت ہے کہ شادی سے قبل ہر لڑکی ناک ضرور چھدواتی ہے اور جو لڑکیاں ناک نہ چھدوائیں ان کو بُزرگ خواتین بار بار کہتی ہیں کہ وہ شادی سے پہلے ہی ناک چھدوا لیں۔ اب اگر عام طور پر آپ گھروں میں یہ سوال پوچھیں گی کہ کیوں چھدوانی چاہیئے تو یقیناً آپ کو بھی یہی جواب سننے کو ملا ہوگا کہ روایت ہے، ایک رواج ہے جس کو پورا کرنا فرض ہے وغیرہ وغیرہ۔۔۔ مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ اس کی اصل وجہ کیا ہے جو شاید کسی بھی لڑکی یا عورت کو اس زمانے میں معلوم نہیں ہیں؟

ہماری ویب ایسے عوامی مسائل اور روایات سے متعلق آپ کو ہمیشہ سے ہی بتاتی آئی ہے اور آج بھی ہم آپ کو ناک چھدوانے کی اصل وجہ بتانے جا رہے ہیں:
٭ ناک چھدوانے سے خواتین کو سر درد نہیں ہوتا، کیونکہ ماہرین ایسا بتاتے ہیں کہ خواتین کو سر درد کی شکایت زیادہ ہوتی ہے جس کی وجہ سے ناک چھدوانا خواتین کے لئے بہت فائدہ مند ہے۔
٭ اس سے ماہواری کے درد میں کمی آ جاتی ہے کیونکہ ناک میں جس جگہ آپ پِن پہنتی ہیں وہ جگہ پیریڈ پریشر پوائنٹ ہے اور جب پریشر پوائنٹ پر پِن موجود ہوتی ہے تو یہ پِن درد کو اپنی طرف کھینچتی ہے۔
٭ اس کی وجہ سے خواتین کے جسم میں ہارمونز متحرک ہو جاتے ہیں جو ان کے مدافعتی نظام کو بھی بڑھانے کا کام کرتے ہیں۔

٭ بچے کی پیدائش کے وقت بھی ہونے والے درد کو کنٹرول کرنے میں مدد نوز پِن کی وجہ سے ملتی ہے ایسا ماہرین کا خیال ہے۔
٭ گھٹنوں کے درد کو کم کرنے کے لئے بھی فائدہ مند ہوتی ہے۔
عام طور پر چونکہ شادی کے بعد اس قسم کے مسائل زیادہ ہوتے ہیں اسی وجہ سے خواتین کو شادی سے قبل ناک چھدوانے کے لئے کہا جاتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں