دھاندلی زدہ حکومت کو ایک ہی دھکے میں باہر نکال پھینک دینگے ،مولانا فضل الرحمن

آزادی مارچ ہوکر رہے گا حکومت کے اوچھے ہتھکنڈوں سے مرعوب نہیں ہونگے،اپنے مطالبات سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے،آزادی مارچ کو روکنے والی تمام روکاٹوں کو اکھاڑ پھینکیں گے، سربراہ جمعیت علمائے اسلام
جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ دھاندلی زدہ حکومت کو ایک ہی دھکے سے باہر نکال کر پھینک دیں گے، آزادی مارچ ہوکر رہے گا حکومت کے اوچھے ہتھکنڈوں سے مرعوب نہیں ہونگے،اپنے مطالبات سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے،آزادی مارچ کو روکنے والی تمام روکاٹوں کو اکھاڑ پھینکیں گے، ہماری تحریک سے قادیانی اور یہودی خوفزدہ ہیں، آزادی مارچ کی وجہ سے قادیانی اور یہودیوں کی چالیس سالہ سرمایہ کاری تباہ ہورہی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گلشن شہید فارم ہاؤس لاڑکانہ میں جے یو آئی ضلع جیکب آباد کے امیر ڈاکٹر اے جی انصاری کی قیادت میں آنے والے ضلع جیکب آباد اور ضلع خیرپور کے وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر مولانا محمد رمضان پھلپوٹو، حاجی محمد عباس بنگلانی، مولانا عبدالجبار رند، مفتی ثنائ اللہ جمالی، مولانا احسان اللہ گھمبیر اور دیگر بھی موجود تھے۔جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے مزید کہا کہ آزادی مارچ سے دھاندلی زدہ حکومت خوفزدہ اور بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے جے یو آئی کے رہنماؤں اور کارکنان کے گھروں پر چھاپے مارے جارہے ہیں اور گرفتاری کی جارہی ہیں ایسے اوچھے ہتھکنڈوں سے ڈرنے والے نہیں ہم ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے، انہوں نے کہا کہ آزادی مارچ کے قافلے شیڈول کے مطابق 31اکتوبر کو ہی اسلام آباد میں داخل ہونگے، 27اکتوبر کو پورے ملک میں کشمیریوں سے یکجہتی کا اظہار کیا جائے گا اور اس کے بعد قافلے اپنی منزل کی طرف روانہ ہوں گے، انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی جماعتیں ایک پیج پر ہیں اور قوم کی نگاہیں آزادی مارچ پر ہیں نااہل اور نالائق حکمرانوں سے عوام کو نجات دلا کر ہی دم لیں گے،انہوں نے کہا کہ جے یو آئی کی رضاکاروں کی تنظیم پر پابندی کے فیصلے کو مسترد کرتے ہیں رضاکار ہمارے جلسوں اور جلوسوں کی حفاظت اور نگرانی کرتے ہیں، انہوں نے کہا کہ میڈیا پر انصارالاسلام کی جو فوٹیج چلا جارہی ہیں وہ پشاور کی ہیں اور اس کی اجازت ڈپٹی کمشنر نے دی تھی، ہمارا آزادی مارچ مکمل پرامن،جمہوری اور آئینی ہوگا ہمارے جمہوری مارچ کو روکنے کی کوشش کی گئی تو ذمہ دار حکومت ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں