قرضوں کی وجہ سے مہنگائی کی شکار عوام کیلئے ایک اور بری خبر، سابق حکومت کی خالی جیب قرض لے کر میٹرو ٹرین بنانے کی عیاشی کی وجہ سے عوام 2036 تک اس کا قرض ہی اتارتی رہے گی، جانئے سر چکرا دینے والے معاہدے کی تفصیلات

قرضوں کی وجہ سے مہنگائی کی شکار عوام کیلئے ایک اور بری خبر، سابق حکومت کی خالی جیب قرض لے کر میٹرو ٹرین بنانے کی عیاشی کی وجہ سے عوام 2036 تک اس کا قرض ہی اتارتی رہے گی، جانئے سر چکرا دینے والے معاہدے کی تفصیلات ریل کے قرض پر سود ادا کرے گی۔ سابق پنجاب حکومت کی جانب سے اورنج لائن میٹرو ٹرین کے لئے ایک اعشاریہ 62 ارب ڈالر کا معاہدہ ایگزم بینک کے ساتھ کیا گیا۔ سابق حکومت نے اپوزیشن کے مطالبے کے باوجود اورنج لائن ٹرین کا معاہدہ پبلک نہیں کیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق پنجاب حکومت 2024 سے 2036تک اس منصوبے کا قرض ادا کرے گی، اس طرح 9 کھرب 53 ارب سے زائد رقم کا مقروض صوبہ سالانہ 6 ارب 28 کروڑ روپے سود کی مد میں ادا کرے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں