مجھ پر کم عمر بچیوں کی شادی کرنے کیلئے دباﺅ ڈالا جاتا ہے: دارالامان لاہور کی خاتون افسر کا سنگین الزام

لاہور دارالامان کی خاتون افسرافشا ں لطیف نے کہا ہے کہ ڈی جی سوشل ویلفیئر کی جانب سے مجھ پر کم عمر بچیوں کی شادی کرنے کیلئے دباﺅ ڈالا جاتا ہے اور یہ راز افشا کرنے پر مجھے میرے شوہر سمیت گرفتار کیا جا رہا ہے۔تفصیلات کے مطابق لاہور دار الامان کی خاتون افسر افشاں لطیف نے گزشتہ روز سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو جاری کی تھی جس میں ان کی جانب سے ڈی جی سوشل ویلفیئر اور ایک سوبائی وزیر سمیت کچھ اہم عہدیداروں پر سنگین الزامات عائد کرتے ہوئے کہا گیا تھا کہ مجھ پر کم عمر بچیوں کی شادی کے لئے دباﺅ ڈالا جاتا ہے۔ اس ویڈیو میں انہوں نے محکمہ سوشل ویلفیئر میں ہونے والی ان سنگین بے ضابطگیوں اور گھناﺅنی سرگرمیوں کا نوٹس لینے کیلئے چیف جسٹس اور وزیر اعظم پاکستان سے اپیل بھی کی تھی۔اگلے روز افشاں گوہر کی ایک دوسری ویڈیو بھی منظر عام پر آئی جس میں وہ دارالامان کی بچیوں کے ساتھ روتے ہوئے کہہ رہی ہیں کہ مجھے اور میرے شوہر کو گرفتار کیا جا رہا ہے اور اب پتہ نہیں کہ یہ لوگ ہم کو کہاں لے کر جاتے ہیں؟ ان بچیوں کا خیال رکھنا اب آپ کی ذمہ داری ہے۔اس حوالے سے ایس ایچ او ٹاﺅن شپ کا کہنا ہے کہ افشاں لطیف کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں