مقبوضہ کشمیر، کرفیو نافذ، مرد، خواتین، بچے شہید، ادویات کی قلت، پیلٹ گنز سے کئی نابینا، دنیا خاموش کیوں ہے؟ وزیر اعظم عمران خان کا انتباہ،بڑے سوال اُٹھادیئے

اسلام آباد (این این آئی) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں کرفیو نافذ،بھارتی فورسز کی جارحیت سے مردو خواتین اور بچے شہید، پیلٹ گنز سے کئی نابینا ہوگئے،کشمیریوں کو جیلوں میں ڈالا جارہا ہے، ہسپتال میں ادویات کی قلت، بنیادی انسانی ضروریات کی فراہمی بند ہے، دنیا مسئلہ کشمیر پر خاموش کیوں ہے؟ مسلمانوں پر مظالم جاری ہیں، کیا عالمی برادری کی انسانیت دم توڑ چکی ہے؟، عالمی براردی میں اس رویے سے دنیا بھر کے 1 ارب 30 کروڑ مسلمانوں کو کیا پیغام دیا جارہا ہے۔ جمعرات کو ٹوئٹر پر اپنے بیان میں وزیر اعظم نے کہاکہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں کشمیریوں پر مسلط جابر مودی سرکار کے کرفیو کا 32 واں دن ہے بھارتی فورسز نے بے گناہ کشمیریوں کا محاصرہ کیا ہوا ہے۔ انہوں نے کہاکہ بھارتی فورسز نے کشمیری مرد و خواتین اور بچوں کو شہید اور زخمی کیا اور پیلٹ گنز سے نابینابنایا۔وزیر اعظم نے کہاکہ قابض بھارتی افواج نے کشمیری مردوں کو خاندان سے دور کیا اور جیلوں میں ڈالا۔ عمران خان نے کہاکہ بھارتی فورسز کے ہاتھوں بچوں اور خواتین سمیت متعدد کشمیری شہید اور زخمی ہوئے ہیں، ہسپتالوں میں ادویات کی قلت ہے، بنیادی انسانی ضروریات کی فراہمی نہ ہونے کی وجہ سے قلت ہے۔ وزیراعظم نے کہاکہ مواصلات بند ہونے کے باعث کشمیریوں کا دنیا سے رابطہ منقطع ہے۔ انہوں نے کہاکہ عالمی میڈیا میں کشمیر میں جاری بربریت کے بارے میں بتایا جارہا ہے، دنیا کشمیر میں جاری بین الاقوامی اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں دیکھے۔ وزیراعظم نے کہاکہ دنیا مسئلہ کشمیر پر خاموش کیوں ہے، انہوں نے کہاکہ، مسلمانوں پر مظالم جاری ہیں، کیا عالمی برادری کی انسانیت دم توڑ چکی ہے؟، عالمی براردی میں اس رویے سے دنیا بھر کے 1 ارب 30 کروڑ مسلمانوں کو کیا پیغام دیا جارہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں