مولانا طارق جمیل نواز شریف کے دورِ حکومت میں کیا کرتے تھے؟ حامد میر نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا، شدید الزامات

اسلام آباد( نیوز ڈیسک) سینئر صحافی حامد میر نے سخت ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ جو بھی میڈیا پر بیٹھ کر جھوٹ بولتا ہے اس پر اللہ تعالیٰ کی لعنت، میری مولانا طارق جمیل سے درخواست ہے کہ آئندہ جب ایسی بات کریں تو نام لیا کریں، اس میڈیا مالک کا نام لیں جس نے جھوٹ بولا ہے۔ تفصیلات کے مطابق مولانا طارق جمیل کے بیان “جتنا جھوٹ میڈیا پر بولا جاتا ہے اسکی وجہ سے بھی مسائل پیدا ہوتے ہیں” پر حامد میر کا سخت ردعمل، مولانا طارق جمیل پر تنقید اور الزامات کی بوچھاڑ کردی، حامد میر نے سخت ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ جو بھی میڈیا پر بیٹھ کر جھوٹ بولتا ہے اس پر اللہ تعالیٰ کی لعنت، میری مولانا طارق جمیل سے درخواست ہے کہ آئندہ جب ایسی بات کریں تو نام لیا کریں، اس میڈیا مالک کا نام لیں جس نے جھوٹ بولاحامد میر نے مولانا طارق جمیل پر الزام لگایا کہ انہوں نے غلط فہمیاں پھیلانے کی کوشش کی، سب کے بارے میں غلط فہمی پھیلانا ٹھیک نہیں ہے۔مولانا طارق جمیل نواز شریف کی کابینہ کے اجلاسوں میں بھی یہی باتیں کرتے تھے جو آجکل عمران خان کے بارے میں کرتے ہیں، میں زیادہ بات نہیں کرتا لیکن انہوں نے ایسی بات کی ہے جس سے میڈیا کے بارے میں سوالات پیدا ہوئے ہیں۔ ہم بھی جواب دینے کا حق رکھتے ہیں۔حامد میر کا مزید کہنا تھا کہ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ایک ٹی وی چینل کے مالک نے انہیں کہا کہ اگر میڈیا پر جھوٹ نہ بولا جائے تو میڈیا نہیں چل سکتا ۔جھوٹ بولنے والے پر اللہ کی لعنت ۔ مولانا طارق جمیل اس میڈیا مالک کا نام بتائیں۔یادرہے کہ مولانا طارق جمیل نے لائیو ٹیلی تھون میں کہا تھا کہ ایک بہت بڑے چینل کے مالک نے کہا کہ مجھے کوئی نصیحت کریں۔ میں نے کہا کہ چینل سے جھوٹ ختم کردو ، جس پر اس چینل کے مالک نے کہا کہ چینل ختم ہوسکتا ہے، جھوٹ ختم نہیں ہوسکتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں