ناراض رہنما ساتھ نہیں رہنا چاہتے تو نکال دینگے،ن لیگ کا باغی ارکان اسمبلی کو ایسا جواب جس نے سیاسی ماحول کو گرما دی

اسلام آباد(آن لائن )سابق وزیراعظم اور حزب اختلاف کی سب سے بڑی جماعت مسلم لیگ(ن) کے مرکزی رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پارٹی کے ناراض رہنماوَں کا موقف جاننے کی کوشش کی جائے گی اور جو ساتھ نہ رہنا چاہیں تو نکالے جائیں گے۔ ایک نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ن لیگی رہنماوَں کی وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقاتوں کی خبریں ٹی وی پر دیکھی ہیں۔ان کا کہنا تھا مسلم لیگ ن تقسیم نہیں ایک ہی جماعت ہے، البتہ اختلاف رائے ہر جماعت میں ہوتی ہے اور اس کا احترام کرنا اچھی بات ہے۔شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ لیکن شہبازشریف مجبوری کے تحت وطن سے باہر ہیں، انہوں نے پارٹی کو بہت وقت دیا ان کو بھی ذاتی معاملات کے لیے وقت دینا چاہیے۔سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ن لیگی رہنماوَں نے پارلیمانی پارٹی اجلاس میں شہبازشریف کے آنے کی بات، پارٹی رہنماوَں کا موقف ہے کہ اپوزیشن لیڈر کو جلد از جلد آنا چاہیے۔ نوازشریف جیسی شخصیت ملک میں نہیں اور ان کی بیماری بھی معمولی نہیں، وہ علاج کے بعد ضرور آئیں گے۔اس سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن میں ن لیگ کی جماعت ہی بول رہی ہے، دیگر اپوزیشن جماعتیں حکومت کے خلاف بولتی ہیں نہ عوام کے حق میں۔ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو یا اعتزاز احسن کو کوئی مسئلہ ہے تو کہہ دیں، ٹی وی پر نمبر نہ بنائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں